افریقی اور ہندوستانی ہاتھی

افریقی اور ہندوستانی ہاتھی کئی طریقوں سے مختلف ہیں اور دونوں کو صرف ظاہری شکل سے پہچانا جاسکتا ہے۔ پہلی علامتیں جو دیکھی جاسکتی ہیں وہ یہ ہیں کہ افریقی ہاتھی بڑے کانوں کے ساتھ گردن تک پہنچتے ہیں ، جبکہ ہندوستانی ہاتھیوں کے چھوٹے چھوٹے کان ہوتے ہیں جو پشت تک نہیں پہنچتے ہیں۔ افریقی ہاتھی ہندوستانی ہاتھیوں سے بھاری اور بڑے ہیں۔ اوسط افریقی ہاتھی کا وزن 4،000 سے 7،000 کلوگرام کے درمیان ہے ، جبکہ ہندوستانی ہاتھی کا وزن صرف 3،000-6،000 کلوگرام ہے۔ بلندی پر منحصر ہے ، افریقی ہاتھی اپنے کندھوں پر چار فٹ تک پہنچ جاتے ہیں اور ہندوستانی ہاتھی اس سے ڈیڑھ انچ نیچے اترتے ہیں۔ افریقی ہاتھی کا سب سے اونچا نقطہ کندھے پر ہے ، ہندوستانی ہاتھی کا سب سے اونچا نقطہ پیٹھ پر ہے۔ دو ہاتھیوں کو بھی جلد سے پہچانا جاسکتا ہے۔ افریقی ہاتھیوں کی جلد ہندوستانیوں سے زیادہ جھرریوں والی ہے۔

دونوں ہاتھیوں کی پیٹھ ، پیٹ اور سر میں فرق ہے۔ افریقی ہاتھیوں کے مقدر کی شکلیں ہوتی ہیں ، جبکہ ہندوستانی ہاتھیوں میں محدب یا فلیٹ کمر ہوتا ہے۔ افریقی ہاتھی کا پیٹ پچھلی ٹانگوں کی سمت نیچے کی طرف تشکیل دیا جاتا ہے۔ ہندوستانی ہاتھیوں کے بیچ میں چپٹا یا مڑے ہوئے پیٹ ہوتے ہیں۔

ہندوستانی ہاتھی کا ڈھانچہ اور سامنے سے پیچھے تک جھکا ہوا ہے ، لیکن افریقی ہاتھی کے سر کی یہ شکل نہیں ہے۔

افریقی ہاتھیوں کے دانتوں پر ہیرے کی شکل کا داغ ہے ، جبکہ ہندوستانی ہاتھیوں نے داڑھ کو دباؤ ہے۔ خواتین اور مرد افریقی ہاتھی مردوں سے لمبے اور لمبے ہیں۔ صرف ہندوستانی ہاتھیوں کے دانت ہوتے ہیں ، اور خواتین کی گرفت نہیں ہوتی ہے یا وہ سیدھے سادھے ہیں۔ افریقی ہاتھی کا نچلا ہونٹ ہندوستانی ہاتھی کے لمبے اور مڑے ہوئے ہونٹوں سے چھوٹا اور گول ہے۔ افریقی ہاتھیوں کے تنے میں زیادہ بجتے ہیں اور ہندوستانی ہاتھیوں کی انگوٹھی کم ہوتی ہے۔ افریقی ہاتھی کا جسم ہندوستانی ہاتھی سے زیادہ مشکل نہیں ہے۔

خلاصہ:

1. افریقی ہاتھی بڑے کانوں سے گردن تک پہنچتے ہیں ، جبکہ ہندوستانی ہاتھیوں کے چھوٹے چھوٹے کان ہوتے ہیں جو پشت تک نہیں پہنچتے ہیں۔ African. افریقی ہاتھی ہندوستانی ہاتھیوں سے بھاری اور بڑے ہیں۔ African. افریقی ہاتھیوں کی جلد ہندوستانیوں سے زیادہ جھرری ہے۔ Both. دونوں ہاتھیوں کی پشت ، پیٹ اور سر کی شکل میں فرق ہے۔

حوالہ جات